ہفتہ ۲۴ اگست۲۰۱۹

پروگرام جُو جی بی

جمعرات, ۰۱   جنوری ۱۹۷۰ | ۰۲:۲۱ صبح

سینئر صحافی عامیر حسین نے پی آئی اے کی طرف سے گلگت بلتستان سفرکرنے والے مسافروں سے ملک کے دیگر علاقوں کا سفر کرنے والے مسافروں کے مقابلے میں زیادہ کرایہ لینے کو وہاں کے لوگوں استحصال قرار دیتے ہوئے حکام کرایوں میں نظرثانی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔یہ مطالبہ انہوں نے گلگت بلتستان کے حوالے سے ریڈیو نیوز نیٹ ورک ایف ایم 99 کے ہفتہ وار پروگرام جو جی بی میں گفتگو کے دوران کیا ۔اس حوالے سے گفتگو میں حصہ لیتے ہوئے گلگت بلتستان کے نوجوانوں کی آگاہی کے لئے کام کرنے والے سرگرم کارکن اکبر صابری نے کہا کہ پی آئی اے کی طرف سے گلگت بلتستان کا سفر کرنے والوں اتنے زیادہ کرایوں وصول کرنے کو زیادتی قرار دیا اور کہا ہے کہ اس سے وہاں کے لوگوں میں احسا س محرومی اور بڑھ جائے گی ۔واضح رہے کہ پی آئی اے کے ویب سائٹ کے مطابق اسلام آباد سے سکردو کے لئے کرایہ 13420گلگت 11610اور لاہور 6164روپے ہے اور ان تینوں مقامات کے لئے پرواز دورانیہ برابر یعنی ایک گھنٹہ ہے۔اور اسلام آباد سے کراچی کا تک کرایہ3 1328روپے لیا جاتا ہے جبکہ اسلام آباد سے کراچی کے پراز کا دورانیہ ایک گھنٹہ 55منٹ ہے ۔ ادھر گلگت بلتستان مقامی اخبارات کے مطابق پی آئی اپنے کرایوں میں کمی کر دی ہے پھر بھی یہ رقم لاہور اور کراچی کے کرایوں کے مقابلے میں زیادہ ہے۔گلگت بلتستان کے مسافروں اس قدر زیادہ کرایہ وصول کرنے کی وجہ سے وہاں کے لوگوں شدید مایوسی پائی جاتی ہے سینئر صحافی عامیر حسین نے بتایا کہ اس سلسلے میں رواں سال گلگت بلتستان قانون اسمبلی میں قراد بھی پاس کی گئی تھی عامر حسین نے پی آئی اے حکام کی طرف اس قرار داد پر عمل در آمد نہ کرنے پر افسوس کا اظہار کیا۔ رواں سال سے شروع ہونے یہ ہفتہ وارپروگرام ایف ایم 99سے جُوجی بی کے نام سے ہر بدھ کو پیش کیا جاتا ہے جس میں گلگت بلتستان تعلق رکھنے والوں کو دعوت دی جاتی ہے۔