ہفتہ ۲۴ اگست۲۰۱۹

بھارتی وزیر خا رجہ نے کشمیر سے متعلق ڈونلڈ ٹرمپ کا بیان مسترد کر دیا

بدھ, ۲۴   جولائی ۲۰۱۹ | ۱۰:۴۰ صبح

نادیہ اختر: بھارتی وزیر خا رجہ ایس جے شنکر نے مسئلہ کشمیر کے حل سے متعلق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا بیان مسترد کر دیا ۔

میڈیا کے مطابق ایس جے شنکر نے منگل کو بھارت کی راجیہ سبھا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی وزیرِ اعظم نریندر مودی نے امریکی صدر سے مسئلہ کشمیر کے حل سے متعلق کوئی درخواست نہیں کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت میں باہمی مذاکرات ہوں گے اور وہ تب  ہوں گے جب پاکستان سرحد پار دہشت گردی کو روکے گا۔ امریکی صدر واضح کر چکے ہیں، اگر بھارت اور پاکستان دونوں امریکہ سے درخواست کریں تو امریکہ کشمیر تنازع کے حل کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ ۔بھارت کی اپوزیشن جماعت کانگریس کی رہنما سونیا گاندھی نے صحافیوں کو بتایا ہے کہ انہوں نے اپنی پارٹی کو یہ مسئلہ اٹھانے کی ہدایت کر دی ہےکہ ہم امریکی صدر کے بیان کا مسئلہ اٹھا رہے ہیں اور مزید اٹھائیں گے۔کانگریس کے رہنما اَدھیر چوہدری نے پارلیمان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کی سرکار نے امریکہ کے سامنے سر جھکا دیا ۔ادھر میر واعظ عمر فاروق کا کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر کے سب سے زیادہ متاثرہ کشمیری عوام ہیں۔میر واعظ نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ ’’کشمیر کے عوام مسئلہ کشمیر کا جلد حل چاہتے ہیں۔ جو کوششیں یا مذاکرات پاکستان اور بھارت کو مسئلہ کشمیر کے حل کی طرف لے کر جائیں وہ ان کی حمایت کریں گے۔ امریکی صدر نے وزیر اعظم پاکستان سے ملاقات کے میں بھارت اور پاکستان کے درمیان کشمیر کے تنازع کو حل کروانے میں کردار ادا کرنے کی پیش کش کی ہے۔وزیرِ اعظم بننے کے بعد عمران خان کے پہلے دورہ امریکہ میں امریکی صدر سے ملاقات میں صدر ٹرمپ نے کہا کہ ’’مجھے دو ہفتے پہلے بھارتی وزیرِ اعظم نریندر مودی نے کشمیر کے معاملے میں ثالث کا کردار ادا کرنے کے لئے کہا ہے۔ جس کے جواب میں، میں نےکہا کہ اگر یہ مسئلہ حل ہو سکے تو میں ثالث کا کردار نبھانے کے لئے تیار ہوں۔ یاد رہے کہ امریکی صدر اور بھارتی وزیرِ اعظم کے درمیان ملاقات جون میں جاپان میں ہونے والی جی 20 کانفرنس میں ہوئی تھی۔  

تبصرہ کریں