جمعرات ۲۸ اکتوبر۲۰۲۱

امریکا نے چینی ڈرونز کے استعمال پر پابندی عائد کر دی

جمعہ, ۰۱   نومبر ۲۰۱۹ | ۰۲:۲۶ شام

امریکا نے سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر چین کے ڈرونز کے استعمال پر پابندی عائد کر دی۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کے ڈرونز کے استعمال پر پابندی امریکا کی وزارت داخلہ نے لگائی۔امریکی وزارت داخلہ کے ترجمان نک گڈون نے چینی ڈرونز کے استعمال پر پابندی کی وجوہات نہیں بتائیں لیکن امریکا چین کی الیکٹرانک اشیاء کے حوالے سے بہت زیادہ تحفظات رکھتا ہے۔

نک گڈون نے کہا کہ سیکریٹری وزارت داخلہ ڈیوڈ برن ہارٹ نے ڈرونز کے دوبارہ جانچ کی ہدایت کی ہے۔

ان کا کہنا تھا سیکریٹری ڈیوڈ برن ہارٹ نے ہدایت کی ہے کہ جب تک تمام ڈرونز کی جانچ نہیں ہو جاتی اس وقت تک چین کے تیار کردہ اور چین کے پارٹس پر مشتمل ڈرونر کا استعمال بند کر دیا جائے۔

نک گڈون نے بتایا کہ صرف ایمرجنسی مقاصد جیسے جنگل میں لگی آگ پر قابو پانے، سرچ اور ریسکیو آپریشن اور قدرتی آفات پر قابو پانے کے لیے ڈرونز کی اجازت ہو گی۔

ایک محتاط اندازے کے مطابق امریکی وزارت داخلہ کے پاس اس وقت 810 ڈرونز ہیں جو تمام کے تمام چین کے تیار کردہ ہیں۔

ذرائع کے مطابق ان ڈرونز میں سے صرف امریکی ساختہ ہیں لیکن اُن میں بھی چین کے تیار کردہ پارٹس شامل ہیں۔

خیال رہے کہ رواں برس مئی میں امریکی قومی سلامتی کے ادارے (ہوم لینڈ سیکیورٹی) نے ایک وارننگ جاری کی تھی کہ چین کے تیار کردہ ڈرونز امریکا کی سلامتی کے لیے خطرہ ہو سکتے ہیں۔



تبصرہ کریں