ہفتہ ۲۴ اگست۲۰۱۹

چین کے نائب سفیر کا پاکستان کوکوئلے کے منصوبے پر کام کرنے کا مشورہ

منگل, ۱۱   جون ۲۰۱۹ | ۰۹:۲۲ صبح

فدا حسین:پاکستان میں چین کے نائب سفیر لیجیان زاؤ نے پاکستان کو توانائی کے مسلے پر قابوپانے کے لئے کوئلے کے منصوبے پر کام کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

اسلام آباد میں منعقدہ ایک سمینار سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس وقت چین میں کوئلے سے چلنے والے منصوبوں کی تعداد 2ہزار ہے جبکہ پاکستان میں اس وقت کوئلے کے دو منصوبے ہیں ۔ان میں سے بھی صرف ایک کام کر رہا ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ چین نے ان دوہزار کوئلے کے منصوبوں کے ماحولیات پر پڑنے والے منفی اثرات سے محفوظ رہنے کے لئے بھی اقدمات اٹھائے ہیں۔ایک برطانوی خبر رساں ایجنسی ان ارتھ نامی ویب سائٹ کے مطابق  توانائی پیدا کرنے کے بہت سے اداروں نے چینی حکومت سے 2030تک مزید 300سے 500کوئلے کے منصوبے شروع کرنے کی اجازت مانگ رکھی ہے۔ لیجیان زاؤ نے پاکستان سے بھی اپنی توانائی کی ضروریات پوری کرنے کے کوئلے کے منصوبوں پر کام شروع کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ اصولی طور پر ہائیڈرل سے بننے والی بجلی سب سے زیادہ ماحول دوست ہے مگر اس کے بننے کے لئے کافی وقت لگتا ہے۔انہوں نے نیلم جہلم کی مثال دیتے ہوئے ہے کہ اس منصوبے پر کئی عرصے سے کام ہو رہا ہےمگر ابھی تک کام مکمل نہیں ہو سکا ہے۔چین کے نائب سفیر نے کوئلے کی توانائی کے منصوبے پر پاکستان کی ممکنہ مدد کے سوال پر خاموشی اختیار کی۔ایک سوال کیا پاکستان کی کمزور معیشت کے کوئلے سے توانائی پیدا کرنے کے منصوبے پر شروع کرنے کا متحمل ہو سکتا ہے کے جواب میں انہوں نے کہا کہ بے شک یہ قدرے مہنگا منصوبہ ضرور ہیں مگر ہائیڈول منصوبوں کے مقابلے میں جلدی اور دیرپا منصوبے ہیں ۔تاہم برطانوی نیوز ایجنسی ان ارٹھ کی رپورٹ کہتی ہے نئے کوئلے کے منصوبوں سے درجہ حرارت میں 2ڈگری کا اضافہ ہوگا۔  چینی سفیر کے خطاب سے پہلے وزیر اعظم کے مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم کا کہنا تھا کہ گاڑیوں سے دھواں کا اخراج فضائی آلودگی کا ایک بڑاسبب ہے اور حکومت فضائی آلودگی سے نمٹنے کے لئے الیکٹرک گاڑیوں پر پالیسی سازی کے مراحل سے گزر رہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ وزیر اعظم نے اس منصوبے کے ابتدائی مسودے کی منظوری دے دی ہے اور کلیدی شراکت داروں کے ساتھ پالیسی مشاورت کا عمل جاری ہے جسے کابینہ میں آئندہ چند ہفتوں میں پیش کیا جائے گا۔
ملک امین اسلم نے کہا کہ الیکٹرک گاڑیوں کے استعمال سے فضائی آلودگی سمیت ہمارے دیگر کئی مسائل بھی حل ہونگے جیسے ، ایندھن کی درآمد کے بل میں کمی اور ٹرانسپورٹ کی دو تہائی لاگت کم ہو گی ۔ انہوں نے بتایا کہ ماحولیاتی مسائل سے نمٹنے کے لئے آئندہ بجٹ میں آٹھ ارب روپے دس بلین درخت لگانے کے پروگرام کے لئے مختص کیے جا رہے ہیں ہیں۔ ملک امین اسلم نے بھارت کو ایک دفعہ موسمیاتی تبدیلی کے اثرات سے نمٹنے کے لئے مشترکہ حکمت اپنانے پر زور دیتے ہوئے کہا اس حوالے سے دونوں ملکوں کو جلد مذاکرات شروع کرنے چاہیں ۔یاد رہے کہ تین سال پہلے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما فرحت اللہ بابر نے گلیشیر کے پگلاؤ کو پاک بھارت جامع مذکرات کا حصہ بنانے کا مطالبہ کیا تھا۔اس حوالے سے پاکستان کے دفتر خارجہ کا موقوف رہا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیاں مذکرات شروع نہ ہونے سےاس طرح کے درجنوں مسائل پیدا ہو رہے ہیں ۔
سیمینار کے اختتام پر فاطمہ جناح یونیورسٹی کی عظمی جبیں اور عبد ولی خان یونیورسٹی مردان سے محمد وسیم کو فضائی آلودگی سے نمٹنے کے لئے جدید حل پیش کرنے پر پہلی اور دوسری دوسری پوزیشن حاصل کرنے پر نقد انعام دیا گیا۔ سمینار کا اہتمام ایک غیر سرکاری تنظیم ادارہ برائے پائدار ترقی نے فضائی الودگی سے پیدا ہونے والے مسائل اور ان کے حل کے حوالے سے منعقد کیا تھا۔

تبصرہ کریں