پیر ۳۰ نومبر۲۰۲۰

مریم نواز کا ایجنسیوں پر گلگت بلتستان انتخابات چوری کرنے کا الزام

بدھ, ۱۸   نومبر ۲۰۲۰ | ۰۶:۲۵ شام

مسلم لیگ(ن) کی نائب صدر نے گلگت بلتستان میں ان کی جماعت کی ناکامی کی ذمہ داری خفیہ ایجنسیوں پر عائد کرتے ہوئے کہا کہ ووٹ کو عزت دو کے بیانئے کی وجہ سے حکمران جماعت دھاندلی کے باوجود کوئی واضح اکثریت نہیں ملی ہے۔

   مریم نواز نے یہ مبینہ الزام مہانسرہ میں جلسے سے خطاب میں عائد کیا۔ تاہم مسلم لیگ کی نائب صدر نے اپنے الزام کے دوسرے ہی سانس میں کہا کہ تحریک انصاف کو ان انتخابات میں خاطر خواہ نہیں ملی۔ وفاقی وزیر اطلاعات بھی تحریک انصاف کو سیٹین زیادہ نہ ملنے کو وہاں کے انتخابات شفاف ہونے کی علامت قرار دیتے آئے ہیں۔ 

 

                 ان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ(ن) کے امیدوار چرانے، الیکشن کو چوری کرنے، ساری ایجنسیز کے نمائندے گلگت بلتستان میں بٹھانے، جوڑ توڑ کرنے کے باوجود آپ کو کتنی سیٹیں ملیں، تمام تر دھاندلی کے باوجود اسے صرف 8سیٹیں ملیں اور وہ سیٹیں بھی ان کی نہیں ہیں بلکہ مسلم لیگ(ن) کے توڑے ہوئے امیدواروں کی مرہون منت ہیں۔

 

                مریم نواز نے ملک کی موجودہ تمام خامیوں کی ذمہ داری اسٹلبشمنٹ پر عائد کرتے ہوئے کہا کہ جب عمران خان سے جواب پوچھا جاتا ہے تو کہتا ہے کہ میں اور ادارے ایک پیج پر ہیں، اس کا مطلب تمام تر ناکامی کی ذمے داری عمران خان کو اقتدار میں لانے والے ہیں۔ 

 

                     آج جو پاکستان کی ترقی کی شرح زمین کے نیچے چلی گئی ہے کشمیر کو بھارت کی جھولی میں چلا گیا ہے لوگ  عمران خان کو اقتدار میں لانے والوں(اسٹبلشمنٹ) کو قرار دے رہے ہیں۔ مریم کے الفاظ 'لوگ تو تمہیں اس قابل بھی نہیں سمجھتے عمران خان کہ تمہیں ناکامی کا ذمے دار بھی قرار دیں'۔

 

                 مریم نواز نے کہا کہ ہم ان 8 سیٹوں کی مبارکباد عمران خان کو نہیں دیتے بلکہ بھیک میں ملنے والی ان 8 سیٹوں کی مبارکباد بھی ہم سلیکٹرز کو دیتے ہیں۔

 

                    انہوں نے گگت بلتستان انتخابات کے پر اپنی انتخابی مہم کے تجربے کی روشنی میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا پورے پاکستان نے دیکھا کہ گلگت بلتستان کے ایک کونے سے دوسرے کونے تک صرف شیر کی آواز آ رہی تھی اور لوگ نواز شریف کی حمایت میں باہر نکلے اور اسی لیے آج جب گلگت بلتستان انتخابات کا جعلی نتیجہ آیا تو پاکستان میں کوئی اس نتیجے کو ماننے کو تیار ہی نہیں ہے۔                            انہوں نے حکومت کو مزید آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے مزید کہا کہ نواز شریف کے بیانیے نے تمہاری سیاست کو دفن کردیا ہے اور تمہیں کہیں کا نہیں چھوڑا اور یہ نواز شریف کا بیانیہ ہی تھا کہ فکس میچ کے باوجود تمہیں مینڈیٹ نہیں ملا بلکہ صرف بیساکھیاں ملی ہیں۔

 

           مریم نواز نے کہا کہ ہمیشہ سنتے تھے کہ گلگت بلتستان کے الیکشن میں لوگ حکومت وقت کے لیے ووٹ کرتے ہیں، پیپلز پارٹی اقتدار میں تھی تو انہیں 14 سیٹیں ملی، مسلم لیگ(ن) اقتدار میں تھی تو انہیں 16 سیٹیں ملیں اور ہمیں حکومت بنانے کے لیے کسی کی بیساکھی کی ضرورت نہیں پڑی لیکن آج تمام تر دھاندلی کے باوجود تم کو صرف 8 سیٹیں ملیں۔ مریم نواز نے اس عبرتناک شکست قرار دیا۔     

تبصرہ کریں