پیر ۳۰ نومبر۲۰۲۰

وزیر اعظم عمران خان کا دورہ افغانستان

جمعرات, ۱۹   نومبر ۲۰۲۰ | ۰۱:۴۱ شام

وزیر اعظم عمران خان نے افغان صدر ڈٓاکٹر اشرف غنی کی دعوت پر درالحکومت کابل پہنچ گئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق اقتدار سنبھالنے کے بعد وزیر اعظم عمران خان کا یہ پہلا سرکاری دورہ ہے۔ انہوں نے 25 جولائی 2018 کے انتخابات کے بعد اگلے ہی مہینے 18اگست کو وزیراعظم کا حلف لیا تھا۔ 

 

دفتر خارجہ کے مطابق وزیراعظم عمران خان افغان صدر اشرف غنی سے دوطرفہ تعلقات، افغان امن عمل، دونوں ہمسایہ ممالک کے درمیان تجارت اور دیگر باہمی دلچسپی کے امور پر بات چیت کریں گے۔

 

                  پاکستان اور افغانستان کے درمیان تعلقات کئی سالوں سے کشیدگی کا شکار ہیں کیونکہ افغانستان اور پاکستان اپنے اپنے ملکوں میں پیش آنے ناخوشگوار کی زمہ داری ایک دوسرے پر عائد کرتے ہیں۔ اس سلسلسے میں تازہ واقعہ حال ہی میں پاکستانی وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی اور فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار کا مشترکہ  طور پر افغان سرزمین پاکستان کے خلاف استعال ہونے الزام ہے۔ یہ الزام گزشتہ ہفتے کو سول اور عسکری رہنماؤں شاہ محمود قریشی نے بابر افتخار میں مشترکہ پریس کانفرنس میں عائد کی تھی۔

 

                    سول اور عسکری قیادت بھی وزیر اعظم عمران خان کی ہمراہ افغانستان کا دورہ کر رہی ہے ۔ اس وقت افغانستان میں امریکہ اور طالبان کے درمیان امن معاہدے ہونے کے باوجود امن مذکرات میں تعطل اور شدت پسندی کے واقعات میں کئی گنا اضافہ ہونے کی رپورٹ آ رہی ہیں۔ ایسے میں تمام افغان دھڑوں کو پاکستان کس طرح مذکرات کی پیز لا کر شدت پسندی کے واقعات کم کرنے کی کوشش ہوتی ہے اس طرف تمام مبصریں کی نظر ہے۔ اس لئے وزیر اعظم کے ساتھ سرکاری لوگوں کے علاوہ صحافیوں کو بھی اس دورے میں شامل کرنے اطلاعات ہیں۔    

تبصرہ کریں