پیر ۳۰ نومبر۲۰۲۰

گلگت بلتستان کے انتخابات میں وفاقی جماعتیں سادہ اکثریت حاصل کرنے میں ناکام

پیر, ۱۶   نومبر ۲۰۲۰ | ۱۲:۳۹ شام

فدا حسین: گلگت بلتستان کے انتخابات میں حکمران جماعت سمیت تمام وفاقی جماعتیں حکومت بنانے کے لئے سادہ اکثریت حاصل کرنے میں ناکام ہوگئیں۔

 اب تک کی غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کو گلگت بلتستان کے 23 انتخابی حلقوں میں سے 8 پر کامیابی ملی ہے اور 7 آزاد امیدوار, 3 پاکستان پپلز پارٹی ، 2 سیٹیں مسلم لیگ نون کو ملی ہیں جبکہ گلگت 2 جمیل احمد اور تحریک انصاف کے فتح اللہ خان کے درمیاں تنازع پیدا ہو گیا ہے۔ تاہم ایک حلقہ گلگت 3 تین پر انتخاب اگلے ہفتے ہوگا۔ اس حلقے میں پاکستان تحریک انصاف صدر جعفر شاہ وفات پر انتخابات ملتوی ہو گیا تھا۔                               غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق حلقہ 1 گلگت 1۔ امجد ایڈوکیٹ پیپلز پارٹی،حلقہ 4 نگر 1۔ امجد ایڈوکیٹ پیپلز پارٹی، حلقہ 5 نگر 2۔ جاوید منوا آزاد ، حلقہ 6 ہنزہ۔ کرنل عبیداللہ پی ٹی آئی ، حلقہ 7 سکردو 1۔ راجہ زکریا پی ٹی آئی ، حلقہ 8 سکردو 2۔ کاظم میثم ایم ڈبلیو ایم ، حلقہ 9 سکردو 3۔ وزیر سلیم آزاد ، حلقہ 10 سکردو 4۔ راجہ ناصر آزاد ، حلقہ 11 کھرمنگ۔ امجد زیدی پی ٹی آئی ، حلقہ 12 شگر۔ راجہ اعظم پی ٹی آئی ، حلقہ 13 استور 1۔ خالد خورشید پی ٹی آئی ،حلقہ 14 استور 2۔ شمس لون پی ٹی آئی ، حلقہ 15 دیامر 1۔ شاہ بیگ آزاد ،حلقہ 16 دیامر 2۔ محمد انور مسلم لیگ ن،حلقہ 17 دیامر 3 کے نتیجے کا ابھی اعلان نہیں ہوا ہے ، حلقہ 18 دیامر 4۔ گلبر خان پی ٹی آئی ، حلقہ 19 غذر 1۔ نواز ناجی آزاد ، حلقہ 20 غذر 2۔ نزیر احمد پی ٹی آئی ، حلقہ 21 غذر 3۔ غلام محمد مسلم لیگ ن ،حلقہ 22 گانچھے 1۔ مشتاق حسین آزاد ،حلقہ 23 گانچھے 2۔ عبد الحمید آزاد ،حلقہ 24 گانچھے 3۔ انجینیر اسماعیل پیپلز پارٹی جیت گئے۔

 

                                                                                   گلگت بلتستان کے انتخابی مہم میں وفاق میں حکمران جماعت سمیت تین بڑی جماعتیں تحریک انصاف، پاکستان پیپلز پارٹی، اور مسلم لیگ نون کے سربراہوں نے بھر پور حصہ لیا، تاہم سپریم اپلیٹ کورٹ نے ارکان اسمبلی اور وفاقی وزرا کی انتخابی مہم چلانے کو الیکشن ایکٹ 2017 کی خلاف ورزی قرار دیا۔ تاہم یہ فیصلہ جس وقت آیا اس وقت انتخابی مہم کے محض دو دن رہ گئے تھے۔ 

 

                واضح رہے کہ گلگت بلتستان اسمبلی کا ایوان 33 ارکان پر مشتمل ہوتا ہے جس میں 24 جنرل نشستیں، 6 مخصوص اور 3 خواتین کی مخصوص نشستیں شامل ہیں۔ 

تبصرہ کریں