پیر ۱۶ دسمبر۲۰۱۹

ہوا میں ڈرون اور زمین میں کار بنے والا ربورٹ کا تجربہ

بدھ, ۲۲   مئی ۲۰۱۹ | ۰۲:۵۷ شام

سیرت فاطمہ:اسرائیل میں ہوا میں ڈرون اور زمین میں کار بنے والےربورٹ کا تجربہ کامیاب ہو گیا ہے ۔

کچھ ماہ قبل پانی میں تیرنے اور ہوا میں پرواز کرنے والے ڈرون کا تذکرہ سننےمیں آیا تھا اور اب اسرائیلی ماہرین نے ایسا ڈرون بنایا ہے جو  ہوا میں پرواز کرنے کے ساتھ ساتھ  زمین پر  بھی دوڑتا ہے۔یہ کواڈکاپٹر قسم کا ڈرون ہے جو زمین کو چھوتے ہی پہیوں کی شکل اختیار کرلیتے ہیں۔ اسے ایف اسٹار (فلائنگ اسپرول ٹیونڈ آٹونامس روبوٹ) کا نام دیا گیا ہے۔ اسرائیل میں واقع بین گوریو یونیورسٹی کے ماہرین نے چار پروپیلر والے کواڈ کاپٹر کو ایک کار میں تبدیل کرنے کا کامیاب مظاہرہ کیا ہے۔ اس پر چار افقی پروپیلر (پنکھڑیاں) اٹھان کی قوت فراہم کرتی ہیں اور ڈرون کسی بھی سمت باآسانی پرواز کرسکتا ہے۔  یہ چارج ہونے پر یہ 20 منٹ تک فعال رہتا ہے اور اسے کسی حادثے کےبعد تلاش اور بحالی (سرچ اینڈ ریسکیو) کے کاموں میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔ یہ ملبے اور تنگ جگہوں پرباآسانی 400 کلوگرام وزنی اشیا، دوا یا خوراک لےجاسکتا ہے۔ مختلف اطلاعات کے لیے ڈرون روبوٹ کے کئی ورژن پر کام ہورہا ہے۔ بین گوریون یونیورسٹی سے وابستہ پروفیسر ڈیوڈ زروک کہتے ہیں  کہ اگلے مرحلے میں بہتر پروگرام اور الگورتھم بنا کر اس کی رفتاراور کارکردگی کومزید بہتر کیا جاسکتا ہے۔

تبصرہ کریں