منگل ۲۲ اکتوبر۲۰۱۹

انسانی جسم میں دوائی پہنچانے کے لئے روبوٹ داخل کرنے کا منصوبہ

جمعہ, ۱۲   جولائی ۲۰۱۹ | ۱۰:۵۰ صبح

پلوشہ اقبال:جرمنی کے ماہرین نے ایک چھوٹا جیلی فش نما روبوٹ تیار کیا ہے،جو چیزوں کو ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جا سکتا ہے۔

جرمنی کے ماہرین نے ایک ایسا  روبوٹ تیار کیا ہے جس کی شکل جیلی فش کی طرح ہے۔ یہ روبوٹ چیزوں کا ایک جگہ سے دوسری جگہ لے کر جانے کی صلاحیت رکھتا ہے اور جب چیزوں کو ان کی منزل تک پہنچا دیتا ہے تو اس کے بعد خود کو ختم کر لینے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے"جیلی فش نما روبوٹ"بغیر کسی تار کے کام کرتا ہے اور اس کا سائز5ملی میٹر ہے۔اس روبوٹ کو چلانے کے لئے اس پرمقنا طیسی ذرات لگائے گئے ہیں جو کہ بیرونی مقناطیسی میدان کے زیر اثر کام کرتے ہیں۔اب ماہرین ایسی منصوبہ بندی کر رہے ہیں  جس کےمطابق اب اس روبوٹ کو انسانی جسم  میں دوائیں پہنچانے کے لئے استعمال کیا جائے گااور روبوٹ کی انسانی جسم کے اندر موجود مختلف نظاموں کے حوالے سے ٹریننگ بھی کی جائے گی تا کہ کسی نقصان کے بغیر یہ اندرونی اعضا کو نہ صرف دوا پہنچا سکے بلکہ ضرورت پڑنے پر ان کی مرمت کا کام بھی سر انجام دے سکے۔

تبصرہ کریں