الیکشن کمیشن

استعفوں کی صورت میں صوبائی ضمنی الیکشن کروا دیں گے: الیکشن کمیشن

اسلام آباد: آزادی مارچ کے اختتامی جلسے (روالپنڈی) میں پی ٹی آئی کے چیئرمین و سابق وزیراعظم عمران خان کی جانب سے صوبائی اسمبلیوں سے استعفوں کے اعلان کے بعد الیکشن کمیشن کا ردعمل بھی سامنے آیا ہے۔الیکش کمیشن کے ترجمان نے کہا کہ صوبائی اسمبلی تحلیل ہونے پر قومی نہیں بلکہ متعلقہ صوبائی اسمبلی کاالیکشن دوبارہ ہوگا. انہوں نے کہا کہ جتنے بھی اراکین مستعفی ہونگے الیکشن کمیش 60 روز میں ضمنی انتخابات کروانے کا پابند ہے.

ترجمان نے کہا کہ کسی بھی صوبائی حلقے میں انتخابات پر تقریباً پانچ سے سات کروڑ روپے خرچ ہوں گے، اگرچہ ایک ہی سال میں ضمنی اور عام انتخابات کرانا مشکل ہے مگر ہم قانون کے پابند ہیں۔

انیہوں نے مزید کہا کہ حلقہ بندیاں اور بلدیاتی انتخابات بھی مشکل کام تھا جو ہم نے کیا، اسی طرح قانون کے مطابق اگر ضمنی الیکشن مشکل بھی ہے تو انتخابات کرائیں گے۔

الیکش کمیشن کے ترجمان کے مطابق پنجاب اورخیبرپختونخوا اسمبلی کے دوبارہ انتخاب پر کم ازکم ساڑھے 22ارب کا خرچ آئےگا۔

 #rnn

یہ بھی پڑھیں۔

افغان خواتین

افغان خواتین کا طالبان کے خلاف احتجاج، اسلام کے دعوی دار دینی تعلیمات کے خلاف جا رہے ہیں: خطاب

افغان خواتین کا طالبان کے خلاف احتجاج، اسلام کے دعوے دار دینی تعلیمات کے خلاف …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے